سپلا کی کال پر لیکچررز کی ہڑتال، پرچہ شروع ہونے میں تین گھنٹے تاخیر

ٹھٹھہ(نامہ نگار)سپلا کی کال پر لیکچررز کی جانب سے ہڑتال کے باعث پرچہ شروع ہونے میں تین گھنٹے تاخیر، کالج اساتذۃ کے امتحانی مراکز کے بائیکاٹ کے باعث گیارہ سو سے زائد طلبہ تین گھنٹے تک پرچہ شروع ہونے کا انتظار کرتے رہے۔ تفصیلات کے مطابق سندھ پروفیسرز اینڈ لیکچررز ایسوسی ایشن کی جانب سے مطالبات کے حق میں دی گئی ہڑتال کی کال پر لیکچررز نے مکلی میں واقع گورنمنٹ بوائز ڈگری کالج ٹھٹھہ میں جامع سندھ کے کالج سائیڈ پر ہونے والے بی ایس سی، بی کام اور بی اے کے امتحانات کے پہلے پرچے کا بائیکاٹ کیا جس کے باعث امتحان دینے کے لیے آئے ہوئے گیارہ سو سے زائد طلبہ صبح نو بجے سے 12 بجے تک امتحانی مراکز میں بیٹھے پرچہ شروع ہونے کا انتظار کرتے رہے اور بعد میں پرچہ شروع نہ ہونے کے خلاف شدید احتجاج اور نعرے بازی کی۔ دریں اثناء گورنمنٹ بوائز ڈگری کالج کے پرنسپل ڈاکٹر محمد علی مانجھی مسلسل تین گھنٹے تک بائیکاٹ کرنے والے اساتذہ کو مذاکرات کے ذریعہ امتحانات میں خدمات سرانجام دینے پر قائل کرنے کی کوشش کرتے رہے تاہم کالج کے اساتذہ کی جانب سے کسی صورت آمادہ نہ ہونے پر اسکولوں کے اساتذہ کو طلب کرکے 12 بجے کے بعد پرچہ شروع کرایا گیا۔ دوسری جانب امتحانات کے موقع پر کسی ممکنہ ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے اور غیر متعلقہ افراد کو اندر جانے سے روکنے کے لیے پولیس کی بھاری نفری کالج کے سامنے تعینات کردی گئی تھی۔

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com