گیس اسٹیشن پرکام کرنے والی پہلی سعودی خاتون

گیس اسٹیشن پرکام کرنے والی پہلی سعودی خاتون
سعودی عرب کے ایک گیس اسٹیشن پر کام کرنے والی خاتون ان دنوں انٹرنیٹ پر لوگوں کی توجہ کا مرکز بنی ہوئی ہیں۔

43سالہ مروت بخاری پہلی سعودی خاتون ہیں جو گیس اسٹیشن پر کام کرتی ہیں ۔خاتون 4بچوں کی ماں ہیں جنہیں کچھ عرصہ قبل ہی گیس اسٹیشن پر سپروائزر کے طور پر ترقی دی گئی تھی جبکہ یہ نقاب میں ہونے کے باوجود بھی اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے سرانجام دیتی ہیں۔

گیس اسٹیشن پرکام کرنے والی پہلی سعودی خاتون
خاتون کا کہنا ہے کہ ابتداء میں انہیں یہ کام کرنے سے پہلے اپنے خاندان کی مخالفت کا سامنا کرنا پڑا تاہم پھر انہوں نے سب کو قائل کرلیا۔واضح رہے کہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے خواتین کو ڈرائیونگ کرنے اور کھیلوں میں حصہ لینے جیسے کئی اقدامات اْٹھائے ہیں۔

Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com