پاکستان میں پانچ سال کے دوران دس ارب درخت لگائیں گے۔ وزیر اعظم

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ قومیں بدعنوانی کی وجہ سے تنزلی کا شکار ہوتی ہیں۔

نیویارک میں غربت کے خاتمے سے متعلق پاک ملائیشیا کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ ڈاکٹر مہاتیر محمد کا بےحد احترام کرتا ہوں اور کرپشن کے خلاف ڈاکٹر مہاتیر محمد کے اقدامات کو سراہتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے پاکستان کو بے شمار وسائل سے نوازا ہے۔ پاکستان میں جنگلات کی شرح کم ہے۔ ہمالیہ کے علاقے میں گلیشیئرز تیزی سے پگھل رہے ہیں۔ امیر ممالک کو چاہیے کہ گرین گیس جیسے مسائل سے نمٹنے کیلئے پاکستان جیسے ملکوں کی مدد کریں۔ ہم پاکستان میں پانچ سال کے دوران دس ارب درخت لگائیں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی سے بہت زیادہ نقصان ہوچکا ہے۔ ہم نے خیبرپختونخواہ میں جیتنے کے بعد وہ اقدامات کیے جو پہلے کسی نے نہیں کیے۔ ایک ارب درخت لگانے کا فیصلہ کیا اور پانچ سال میں ہدف حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔ آئندہ پانچ سال میں دس ارب درخت لگانے کا پروگرام بنایا ہے۔

عمران خان نے مزید کہا کہ پہلے بہت نقصان ہوچکا ہے، اب بھی ماحول کو بہت زیادہ نقصان ہوسکتا ہے۔ ہم نے مقامی کمیونٹیز کو نرسریاں لگانے کیلئے مالی مدد کی ہے۔