پاکستان کی پہلی خاتون وزیر اعظم بے نظیر بھٹو کی 11 ویں برسی

سابق وزیر اعظم پاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی کی چیئرپرسن بے نظیر بھٹو کو قوم سے بچھڑے گیارہ سال بیت گئے۔

بے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر صوبہ سندھ میں آج عام تعطیل کا اعلان کیا گیا ہے جب کہ نوڈیرو کے علاقے گڑھی خدا بخش میں تقریب کا انعقاد کیا گیا ہے۔

بے نظیر بھٹو کی برسی میں شرکت کے لیے ملک بھر سے قافلے گڑھی خدا بخش پہنچ رہے ہیں جہاں وہ بے نظیر بھٹو کے مزار پر حاضری بھی دیں گے۔ برسی کی تقریبات میں شرکت کے لیے پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنما گڑھی خدا بخش پہنچ چکے ہیں۔

گڑھی خدا بخش میں منعقد تعزیتی جلسے سے سابق صدر آصف علی زرداری، پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری سمیت دیگر رہنما خطاب کریں گے۔

ملک کے دیگر شہروں اور دیہاتوں میں بھی قرآن خوانی اور دُعائیہ تقریبات کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔

بے نظیر بھٹو کو 27 دسمبر 2007 کو دہشت گردوں نے راولپنڈی کے لیاقت باغ میں منعقدہ جلسے کے بعد نشانہ بنایا تھا۔

حساس اداروں کی جانب سے بے نظیر بھٹو کو خطرات سے آگاہ کیا گیا تھا تاہم وہ انتخابات کے باعث ملک بھر کے دورے کر رہی تھیں اور لیاقت باغ میں جلسہ بھی انتخابی مہم کا حصہ تھا۔

بے نظیر بھٹو کو لیاقت باغ کے جلسے کے بعد روانہ ہوتے وقت تقریبا دہشت گردوں کی جانب سے نشانہ بنایا گیا تھا۔