جعلی اکاؤنٹس کیس:حکومت نے ای سی ایل میں شامل 172 افراد کی فہرست جاری کردی

حکومت نے ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کیے جانے والے 172 افراد کے ناموں کی فہرست جاری کردی۔

حکومت کی جانب سے جعلی اکاؤنٹس کی جے آئی ٹی رپورٹ میں جن افراد کے نام دیے گئے انہیں ای سی ایل میں شامل کرتے ہوئے فہرست جاری کردی جس میں آصف علی زرداری کا نام 24ویں نمبر پر ہے جب کہ بلاول بھٹو زرداری کا نام 27ویں اور فریال تالپور کا نام 36ویں نمبر پر ہے۔

وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کا نام فہرست میں 155ویں اور سابق وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کا نام 129ویں نمبر پر موجود ہے۔

فہرست میں رکن سندھ اسمبلی مکیش کمار چاولہ، سابق وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال، سابق وزیر امتیاز شیخ کا نام بھی شامل ہے۔

فہرست میں سابق ڈی جی سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی منظور قادر، قائم مقام چیئرمین ایس ای سی پی طاہر محمود، ایس ای سی پی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر عابد حسین، ڈپٹی کمشنر ملیر قاضی جان محمد کے نام موجود ہیں۔

ای سی ایل فہرست میں عبدالغنی مجید اور کمال مجید سمیت اومنی گروپ کے 10 افراد کے نام شامل ہیں جن میں خواجہ سلمان یونس، محمد عارف خان، مصطفیٰ ذوالقرنین ماجد، نمر مجید خواجہ، نازلی مجید اور انور ماجد خواجہ کے نام بھی شامل ہیں۔

فہرست میں سندھ بینک کے صدر بلال شیخ، احسن طارق، منیجر ثروت عظیم، گروپ ہیڈ کریڈٹ ندیم الطاف جب کہ سمٹ بینک کے صدر احسان رضا درانی، آپریشنل منیجر سمٹ بینک محمد ناصر شیخ، نیشنل بینک کے صدر سید علی رضا، ہیڈ کارپورٹ مسعود کریم شیخ کے نام شامل ہیں۔

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس کے دوران گزشتہ روز 172 افراد کے نام شامل کرنے کی منظوری دی گئی تھی۔

اس سے قبل جعلی بینک اکاؤنٹس کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی کے سربراہ احسان صادق نے سپریم کورٹ میں رپورٹ جمع کرائی تھی اور مذکورہ ناموں کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی تھی۔