امام کعبہ کی پارلیمنٹ ہاؤس میں آمد، چیئرمین سینیٹ اور اسپیکر قومی اسمبلی سے ملاقات

امام کعبہ شیخ ڈاکٹر عبداللہ عواد الجوہانی نے پارلیمنٹ ہاؤس کے دورے کے دوران چیئرمین سینیٹ اور اسپیکر قومی اسمبلی سے ملاقاتیں کیں۔

امام کعبہ آج پارلیمنٹ ہاؤس کے دورے پر ہیں۔ دورے کے آغاز پر انہوں نے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی سے ملاقات کی، اس موقع پر ان کے ہمراہ سعودی سفیر اور وزیر مذہبی امور بھی ہیں۔

چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔ پاکستان اور سعودی عرب تاریخی، ثقافتی اور مذہبی رشتوں میں بندھے ہوئے ہیں۔ خطے اور بین الاقوامی امور پر ایک جیسا نقطہ نظر دوطرفہ تعلقات کو مزید تقویت دیتا ہے۔

انہوں نے سعودی عرب کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب نے ہمیشہ مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا جب کہ 2 ہزار سے زائد قیدیوں کی رہائی پر سعودی عرب کے شکر گزار ہیں جب کہ حجاج کے کوٹہ میں اضافہ بھی خوش آئند ہے۔

صادق سنجرانی نے کہا کہ سعودی سرمایہ کاری سے پاکستان میں ترقی و خوشحالی کا نیا دور شروع ہو گا جب کہ پاکستان اور سعودی عرب کے مابین تجارتی عدم توازن کو ختم کرنے کی ضرورت ہے۔ دہشت گردی کو اسلام کے ساتھ منصوب کرنا ایک سوچی سمجھی سازش ہے۔

امام کعبہ نے اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے بھی ملاقات کی۔ ملاقات میں پاک سعودی عرب تعلقات اورمسلم اُمہ کو درپیش مسائل پر تفصیلی بات چیت کی گئی۔

اسد قیصر نے کہا کہ سعودی عرب پاکستان کا بے لوث دوست ہے اور پاکستان اور سعودی عرب مشترکہ عقیدہ، ثقافت، تاریخ اور ورثے کے امین ہیں۔ پاکستان کی پارلیمان دونوں ممالک کے مابین برادرانہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کے لیے پرْ عزم ہے جب کہ مسلم ممالک کے مابین اتحاد اور قریبی رابطے وقت کی اہم ضرورت ہے۔

امام کعبہ نے کہا کہ سعودی عرب پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو بڑی اہمیت دیتا ہے اور انہیں مزید وسعت دینا چاہتا ہے جب کہ مسلمانوں کو دہشت گردی اور دیگر درپیش مسائل کا سبب دین سے دوری اور آپس میں نااتفاقی ہے۔ اسوہٗ حسنہ اور اسلامی تعلیمات پر عمل کر کے ہم دنیا و آخرت میں کامیابی حاصل کر سکتے ہیں۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی جانب سے امام کعبہ کے اعزاز میں ظہرانے کا اہتمام بھی کیا گیا ہے۔

امام کعبہ ظہر کی نماز پارلیمنٹ ہاؤس کی مسجد میں پڑھائیں گے.