دوست ممالک سے مجموعی طورپر12 ارب ڈالرز حاصل ہوں گے. وزیر خزانہ

وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اورچین سے مجموعی طورپر12 ارب ڈالرز حاصل ہوں گے۔ تینوں ممالک سے حاصل ہونے والی رقم رواں سال کا خسارہ پورا کرنے کے لئے کافی ہے۔

فاروق نائیک کے زیرصدارت قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس ہوا، جس میں وفاقی وزیرخزانہ اسد عمرنے کمیٹی کو بریفنگ دیتے کہا کہ سعودی عرب سے 2 ارب ڈالرز مل چکے ہیں اورآئل فیسلیٹی جنوری سے شروع ہوجائے گی، اگلے تین سال ماہانہ 27 کروڑڈالرز کا تیل سعودی عرب سے ادھارملے گا، سعودی عرب سے قرض کی مجموعی رقم 6 ارب ڈالرز ہوگی، متحدہ عرب امارات سے مذاکرات بھی آخری مراحل میں ہیں اورآئند چند دنوں میں معاملات طے پا جائیں گے، سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اورچین سے مجموعی طورپر12 ارب ڈالرزحاصل ہوں گے اورتینوں ممالک سے حاصل ہونے والی رقم رواں سال کا خسارہ پورا کرنے کے لئے کافی ہے۔

وفاقی وزیراسد عمرنے کہا کہ یواے ای کے علاوہ چین سے مذاکرات حتمی مراحل میں ہیں، میں حلف لینے کے دس دن بعد سے آئی ایم ایف سے رابطے میں ہوں، ہم نے اکنامک ایڈوائزری کونسل میں تجاویزمانگی تھیں، ماسوائے ایک کے تمام معیشت دانوں نے آئی ایم ایف کے پاس جانے کی تجویزدی جب کہ آج بھی میری آئی ایم ایف حکام سے وڈیوکانفرنس ہوگی اورامید ہے مزید پیش رفت ہوگی۔