سندھ ہیلتھ کئیر کمیشن کا صوبے بھر میں غیر رجسٹرڈ اسپتالوں اور کلینکس کیخلاف کارروائی کا آغاز

سندھ ہیلتھ کئیر کمیشن نے صوبے بھر میں غیر رجسٹرڈ اسپتالوں اور کلینکس کیخلاف کارروائی کا آغاز کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ بھر کے غیر رجسٹرڈ اسپتالوں اور کلینکس کے مالکان ہو جایئں ہوشیار۔ سندھ ہیلتھ کئیر کمیشن نے صوبے بھر میں غیر رجسٹرڈ اسپتالوں اور کلینکس کے خلاف کاروائی کا آغاز کر دیا ہے۔

سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن نے صوبے کے تمام اسپتالوں اور کلینکس کو 30 جون کے رجسٹریشن کروانے کی تاکید کی تھی اور اب تک 165 اسپتالوں اور کلینکس کو نوٹسز جاری کر دئیے۔

ایک اندازے کے مطابق صوبے بھر میں 20 ہزار سے زائد چھوٹے بڑے اسپتال اور کلینکس موجود ہیں لیکن رجسٹرڈ اسپتالوں اور کلینکس کی تعداد ساڑھے 5 ہزار ہے جبکہ کمیشن کو رجسٹریشن کی مد میں 7000 درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔

ہیلتھ کیئر کمیشن سندھ کے سربراہ ڈاکٹر منہاج قدوائی کاکہنا ہے کہ اب تک عطائیوں کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے 1400 اسپتالوں اور کلینکس کو سیل کیا گیا ہے جن پر ایک کروڑ روپے سے زائد کے جرمانے بھی لگائے گئے ہیں۔

ہیلتھ کیئر کمیشن کے مطابق اسپتالوں اور کلینکس کی رجسٹریشن کے بعد مہنگے علاج اور بھاری فیسوں کا طریقہ کار واضع کیا جائے گا تاکہ ہر شہری کو سستا اور معیاری علاج میسر آ سکے۔