بھارت کا طیارہ مگ 29جالندھر کے قریب گر کر تباہ۔

بھارتی ایئر فورس کا طیارہ مگ 29 تربیتی پرواز کے دوران جالندھر کے قریب گر کر تباہ ہو گیا ہے تاہم پائلٹ محفوظ رہا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق طیارہ تربیتی مشن پر تھا اور تکنیکی خرابی کے باعث حادثہ پیش آیا۔ طیارہ حادثے کا شکار ہونے سے قبل پائلٹ پیراشوٹ سے چھلانگ لگانے میں کامیاب رہا اور کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

بھارتی ائرفورس کے مطابق طیارہ تکنیکی خرابی کے سبب پائلٹ کے کنٹرول سے باہر ہوگیا تھا۔ پائلٹ کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے جائے حادثہ سے محفوظ مقام پر منتقل کردیا گیا ہے۔

مگ 29 انیس سوننانوے میں کارگل وار میں استعمال ہوا تھا اور دو ہزار اٹھارہ سے اب تک بھارتی ایئر فورس کے 13 طیارےگر کر تباہ ہو چکے ہیں۔

گزشتہ سال فروری اور مارچ کے دوران بھارتی فضائیہ کے مجموعی طور 10 جنگی طیارے تباہ ہوئے تھے جن میں سے دو کو پاکستانی فضائیہ نے مار گرایا تھا۔

یکم فروری 2019 کو بھارتی طیارہ میراج فنی خرابی کے باعث زمین بوس ہوگیا جب کے کچھ روز بعد 12 فروری کو بھارت کا مگ 27 تکنیکی خرابی سے گر کر تباہ ہوا۔ 19 فروری کو دو بے ہاک طیارے آپس میں ٹکرا کر تباہ ہوئے۔

پاکستان نے سرحدی خلاف ورزی پر 27 فروری کو بھارت کے جنگی طیارے مگ 21 اور ایس کیو 30 کو مار گرایا تھا اور گزشتہ ماہ کے آخر میں ایک جنگی طیارہ بھی فنی خرابی کے باعث گر گیا تھا۔

بھارتی ایئرفورس کے پاس اس وقت 60 میگ 29 طیارے ہیں اور ان سبھی کو جدید طیارہ سازی اور بہتر ہتھیاروں کے ساتھ مل کر ملٹیروول جیٹ طیاروں میں تبدیل کیا گیا ہے جو ہوا سے ہوا اور ہوا سے زمینی مشن بھی یکساں طور پر انجام دے سکتے ہیں۔