اسلام آباد ہائیکورٹ کا احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کو ہٹانے کا فیصلہ

اسلام آباد ہائیکورٹ نے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کو ہٹانے کا فیصلہ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کو ہٹانے کا فیصلہ کر لیا۔ ترجمان اسلام آباد ہائیکورٹ کے مطابق قائم مقام چیف جسٹس عامر فاروق نے وزارت قانون کو خط لکھ دیا۔

احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے آج صبح اسلام آباد ہائیکورٹ کے رجسٹرارسے ملاقات کی اورایک خط کے ذریعے اپنے اوپر لگنے والے الزامات کی صفائی پیش کی۔ ترجمان اسلام آباد ہائیکورٹ کے مطابق جج ارشد ملک نے خط میں وڈیو میں لگائے گئے الزامات کو بے بنیاد قرار دیا۔ ارشد ملک نے خط کے ساتھ بیان حلفی اور گزشتہ اتوار کو جاری کی گئی پریس ریلیز بھی منسلک کی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے ارشد ملک کے خط کا جائزہ لینے کے بعد انکو ہٹانے کا فیصلہ کرتے ہوئے وزارت قانون کو خط لکھ دیا۔

احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کیخلاف العزیزیہ اسٹیل مل ریفرنس اور فلیگ شپ انوسٹمنٹ ریفرنس کی سماعت کی تھی۔ انہوں نے نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید کی سزا سنائی تھی جبکہ فلیگ شپ ریفرنس میں سابق وزیر اعظم کو بری کیا تھا۔