میئر کراچی کا درخت کاٹنے والوں کے خلاف مقدمہ درج کرانے کا حکم

فاطمہ جناح روڈ پر 50 سال پرانا درخت کاٹنے پرمیئر کراچی وسیم اختر نے درخت کاٹنے والوں کے خلاف مقدمہ درج کرانے کا حکم دے دیا۔

منگل کی شام فریئر ہال کے سامنے فاطمہ جناح روڈ پر اسٹاف لائن مکان نمبر235 کی فٹ پاتھ پر مزدور 50 سال پرانا درخت کاٹ رہے تھے، میئرکراچی وسیم اختر اور میٹروپولیٹن کمشنر سیف الرحمن جو اس وقت ڈائریکٹر پارکس کے دفتر سے اجلاس ختم کرکے باہر آئے تو تناور درخت کٹا ہوا دیکھ کر پریشان ہوگئے۔

میئر نے کہا کہ ہم درخت لگانے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں اور باہر 50 سال پرانا درخت کاٹ دیا گیا وہ موقع پر پہنچے تو مزدوروں نے بتایا کہ مالک مکان نے درخت کاٹنے کا کہا جس پر میئر کراچی اور میٹروپولیٹن کمشنر نے سخت برہمی کا اظہار کیا اور پارک کے عملے کو طلب کرکے مالک مکان کے خلاف مقدمہ درج کرانے کی ہدایت کی اور کاٹے گئے درخت کی لکڑی کو ضبط کرلیا۔

اس موقع پر میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ فٹ پاتھ پر درخت سرکار کی ملکیت ہے کوئی بھی مکان مالک گھر کے سامنے فٹ پاتھ پر سے درخت نہیں کاٹ سکتا،شہری درختوں کی حفاظت کریں، 50 سال پرانا درخت کاٹنا بہت بڑا ظلم ہے، ایسے افراد کو معاف نہیں کیا جاسکتا جو درختوں کو بے دردی سے کاٹتے ہیں اور اس پر شرمندہ بھی نہیں ہوتے اگر لوگوں کو درخت کاٹنے کی اسی طرح آزادی دی گئی تو شہر میں ایک درخت بھی باقی نہیں رہے گا۔