ناصر جمشید کا اسپاٹ فکسنگ میں ملوث ہونے کا اعتراف

پاکستان کے سابق کرکٹر ناصر جمشید نے اسپاٹ فکسنگ میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا ہے۔

پی سی بی نے سزا کے خلاف ناصر جمشید کی اپیل مسترد کردی۔

ناصر جمشید نے اسپاٹ فکسنگ جرم میں ملوث ہونے کے اعتراف کے ساتھ تسلیم کیا ہے کہ انہوں نے اپنے ساتھی کرکٹرز کو بھی میچ فکسنگ میں ملوث ہونے پہ اکسایا تھا۔

سابق پاکستانی کرکٹر پر ایک ٹی 20 میچ میں ساتھی کھلاڑی کو رشوت دینے کا الزام تھا۔ برطانیہ کی نیںشنل کرائم ایجنسی نے اس معاملے کی تحقیقات کے بعد ملوث افراد کو گرفتار کیا تھا۔

کراؤن کورٹ میں 3 دسمبر سے سماعت جاری تھی۔ اس ضمن میں دو دیگر افراد نے بھی دوران تفتیش اپنے اوپر عائد کردہ الزام کا اعتراف کر لیا تھا۔

برطانوی عدالت 9 فروری کو ناصر جمشید کے متعلق فیصلہ سنائے گی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ پہلے ہی ناصر جمشید پر دس سال کی پابندی عائد کرچکا ہے۔