مری سمیت بالائی علاقوں میں طوفانی برفباری، نظام زندگی درہم برہم

لاہور/اسلام آباد: ملک بھر میں سردی کی شدید لہر جاری ہے، بیشتر علاقوں میں بارش اورپہاڑوں پر برف باری سے سردی بڑھ گئی ۔

بالائی علاقوں میں طوفانی برفباری سے نظام زندگی منجمد ہوگیا، شدید برف باری کے باعث مری سمیت خیبر پختونخوا اور دیگرکئی علاقوں کے زمینی رابطے منقطع ہو گئے، گلگت میں10 سال بعد برف باری ہوئی جبکہ مالم جبہ میں 2.4فٹ، کالام، مری8.5انچ، اسکرود6.5انچ، گلگت، دیر میں 1.0انچ برفباری ریکارڈ کی گئی، نتھیا گلی، ایوبیہ ،کالام،کاغان، سوات، شانگلہ ، دیر، مظفرآباد، کوہستان سمیت چترال اور دیگر بالائی علاقوں میں شدید برفباری ہوئی ، لوگ گھروں میں مقید ہو کر رہ گئے ، سیاحوں کی بڑی تعداد نے بالائی علاقوں کا رخ کر لیا، اسلام آباد میں بارش کے بعد موسم نکھر گیا۔

تاہم سردی کی شدت میں اضافہ ہو گیا، مری میں 2 دن برفباری کے بعد سورج نکلنے سے موسم صاف ہو گیا تاہم سردی کی شدت برقرار ہے ، اتوار کی صبح درجہ حرارت منفی 4 ریکارڈ کیا گیا، مالم جبہ، کالام، میاندم اور دیگر بالائی علاقوں میں 2 فٹ برف پڑنے سے موسم انتہائی سرد ہو گیا ۔